انڈے میں سپرائیٹ کی بوتل ملا کر سر میں لگانے سے 5منٹ کے اندر جسم میں ایسی تبدیلی آتی ہے کہ آپ بھی اسے روزانہ کا عمل بنا لیں گے Daily Ausaf

ہم آپ کے لیے لائے ہیں ایک لاجواب ٹوٹکہ جس سے آپ اپنے کافی پیسے بچاسکتے ہیں اور یہ عمل بہت ہی لاجواب اور آزمودہ ہے اس کا رزلٹ آپکو فورا ملے گا شرطیہ ناظرین جسے کے آپ جانتے ہیں کے سردیوں کا موسم ہے اور سردیوں میں انڈا خواہ بوائل شدہ ہو یا پھر ویسے بہت کھاتا جاتا ہے اور اس طاقت کا خزانہ بھی سمجھا جاتا ہے کافی لوگ اسے گرمدودھ میں ڈال کر بھی پیتے ہیں بہرحال انڈا تو ہر کوئی استعمال کرتا اور بوتل بھی ہر کوئی پیتا ہے لیکن ان دونوں کو ملا کر ایک مفید کام کیا جاسکتا ہے جو شاید بہت کم لوگوں کو پتا ہے باظرین آجکل سردیوں میں ہر کوئی ایک وجہ سے بہت پریشان ہوتا ہے اور وہ کصوصا سر میں خشکی کی وجہ سردی میں خشکی ہونا عام سی بات ہے اور اس کے لیے لوگ کوشش کرتے ہیں کے مکتلف قسم کے شیمو آئل وغیرہ استعمال کرتے ہیں بہت کم فائدہ ہوتا ہے اور بہت سارا پیسہ بھی خرچ کرتے ہیں وہ فضول جاتا ہے ۔۔آج ہم آپ کا ایک ٹوٹکہ بتاتے ہیں انڈا پھینٹ لیںاور اس میں سپرائیٹ کی بوتل ڈالیں بوتل کی مقدار جو ہے وہ اس طرح سے ہوکے جو ۲۵۰ ملی لیٹر کی بوتل ہوتی ہے نہ جسے ریگولر کہتے ہیں ۲۵ روپے میں مارکیٹ سے مل جائے گی اس کو آدھا ملانا ہے نہ کے ساری ڈال دینی ہے اور پھر ان دونوں کو اچھی طرح ملا لینا ہے ملانے کے بعد پھر اس کو آپنے سر میں لاگائیں جس طرح آپ کو لگانے میں آسانی ہو چاہے تو ہاتھ سے لگائیں اور چاہے تو برش وغیرہ سے پر کوشش یہی کرنی ہے کے سر کی جلد تک جائے اور کچھ دیر بعد اپنا سر دھولیں تقریبا ۱۵ سے بیس منٹ لگا رہنے دیں اورپھر اپنے سر کا کو دیکھں خشکی کا ناموں نشان نہیں ہوگا اور آپ کا سر بالکل صاف ہوگا انشااللہ..

Post Your Comments

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. Hamariweb.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.