ایک ایسی قسم کی شکرجس سے کینسرختم ہوسکتاہے Daily Ausaf

لندن(ویب ڈیسک )سائنس دان شکر کی ایک قسم ’مینوز‘ سے پھپھڑوں، لبلبے اور جلد کے کینسر کا علاج کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔سائنسی جریدے نیچرل میں شائع ہونے والے مقالے میں انکشاف کیا گیا ہے کہ شکر کی ایک ڈی مینوز میں کینسر کے خلیات کے خلاف سخت مزاحمت دیکھنے کو ملی ہے، شکر کی یہ قسم غذائی سپلیمنٹ کے طور پر بھی استعمال کی جاتی ہے اور سب سے زیادہ امریکی کروندا میں موجود ہوتی ہے۔ماہرین غذا کا کہنا ہے کہ ’ڈی مینوز‘ مرکب دراصل ایک سادہ شکر ہے جو بڑی تعداد میں پولی سیکرائیڈز شکل میں پائی جاتی ہے اور جس کا نقطہ پگھلاؤ 199 سینٹی گریڈ تک ہے اور یہ ایک ’ایلڈو ہکیسوز‘ ہے جو گلوکوز کی ہم ترکیب بھی ہے، مینوز کو پیشاب کی نالی کے انفیکشن کو دور کرنے کے لیے بھی استعمال کیاجاتا ہے۔کینسر پر تحقیق کرنے والے برطانوی ادارے بیٹسن انسٹی ٹیوٹ کے پروفیسر کیون ریان کی سربراہی میں پھیپھڑوں، لبلبہ اور جلد کے سرطان میں مبتلا چوہوں پر تحقیق کی گئی۔ ان چوہوں کو ڈی مینوز کی مقدار دی گئی جس سے کینسر خلیات کی افزائش میں نمایاں کمی دیکھی گئی اور حیران کن طور پر کیمو تھراپی کے سیشن بھی کم ہوگئے اور اس کے مضر اثرات بھی رونما نہیں ہوئے۔ طویل علاج سے کینسر کا خاتمہ بھی ممکن ہو گیا۔پروفیسر لیون کا کہنا تھا کہ کینسر کے مرض میں سب سے تشویشناک بات کینسر کے خلیات کا تیزی سے جسم کے دیگر حصوں میں پھیلنا ہوتا ہے جس سے جسم کی قوت مدافعت کم ہوجاتی ہے، اگر کینسر کے خلیات کی افزائش کو روک دیا جائے تو کینسر کا علاج سہل اور کامیابی کے امکانات دگنا ہوسکتے ہیں۔

Post Your Comments

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. Hamariweb.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.