ذہنی تناومیں کمی کیسےلائیں؟ Bol News

سردیاں شروع ہوتے ہی اکثرافراد کے مزاج میں کاہلی اور چڑچڑاپن محسوس ہونے لگتاہے۔ایسے میں کئی افراد میں ڈپریشن کاعنصر بھی بڑھ جاتا ہے۔طبی ماہرین کاکہناہے کہ سردیوں کے ڈپریشن کوورزش کرکے ٹھیک کیا جاسکتاہے۔ ماہرین کہتے ہیں کہ سرد موسم میں ورزش کی اہمیت دگنی ہوجاتی ہے۔اگر آپ سردیوں سے لطف اندوز ہونا چاہتے ہیں تو ہلکی پھلکی ورزش کی عادت کو اپنالیں یہ نہ صرف موڈ میں مثبت تبدیلی کاسبب بنے گی بلکہ اس سے فٹنس کے کئی مسائل بھی دور ہوجائیں گے۔ایسے میں گھر بیٹھے فٹنس کاحسل ایک بہترین چوائس ہے۔فٹنس کی خواہش رکھنے والے افراد گھرمیں رہتے ہوئے انڈور اسپورٹس اور گیمز کے ذریعے خود کوجسمانی اور ذہنی طور پر فٹ رکھ سکتے ہیں۔اگر آپ کرکٹ،باکسنگ ،ہاکی اور نیٹ بال جیسے گیم بھول گئے ہیں تو ایک بار پھر سے بچپن کی جانب رخ کیجیے۔اسکواش اور بیڈمنٹن تو یقینا آپ کے بھی پسندیدہ کھیلوں میں سے ایک رہ چکے ہوں گے۔ان ڈور کھیلوں سے ذہن پر سکون ہوتاہے،تناؤ اور اضطراب میں کمی،موڈ میں بہتری ،تخلیقی صلاحیتوں میں اضافہ اور توجہ مرکوز کرنے میں بہتری آتی ہے۔انسان ایک جیسی روٹین سے بعض اوقات اُکتاہٹ محسوس کرنے لگتاہے۔سردموسم کے لیے ایک ہی جیسی ورزشوں کو چھوڑ کر انٹرنیٹ اور ایکسر سائز ڈی وی ڈیز سے فائدہ اٹھایا جاسکتا ہے،مثال کے طور پر پاؤنڈ ورک آؤٹ کی سینکڑوں ویڈیوز انٹرنیٹ پر موجود ہیں۔آپ کے لیے انڈورایکسر سائز کے طور پاؤنڈ ورک آؤٹ ایک نیا اضافہ ثابت ہو گا۔سرد موسم کے لیے یہ کارڈیو اور قوت بڑھانے والا ورک آؤٹ تسلیم کیا جاتاہے۔ورک آؤٹ کے دوران کیے گئے اسکواٹس،لنگس،جمپز،ٹوئسٹ اور اسٹریچس کے ذریعے آپ سرد موسم میں بھی خود کو چاق وچوبند محسوس کریں گے۔

Post Your Comments

Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. Hamariweb.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.