Find a Doctor Find a Hospital
کمپیوٹر سکرین سے آنکھوں کو ہونیوالے نقصانات سے کیسے بچیں؟ Neo
لاہور: اگر آپ کمپیوٹر پر کام کرتے ہیں تو آپ ضرور جانتے ہونگے کہ دن کے اختتام تک آپ کی آنکھوں میں خارش ، دھندلا پن، الجھن اور خشکی پیدا ہونی شروع ہو جاتی ہے۔ بعض دفعہ آپ سر درد کا شکار بھی ہو جاتے ہیں۔ آنکھوں کی اس کیفیت کو ڈیجیٹل آئی سٹرین کا نام دیا گیا ہے۔ ان سے بچنے کیلئے درج زیل باتوں پر عمل کیجئے۔ عام طور پر ہماری پلیکیں ایک منٹ میں 15 مرتبہ جھپکتی ہیں جس سے آنکھوں میں نمی برقرار رہتی ہے لیکن جب ہم کوئی کتاب پڑھتے ہیں یا پھر مسلسل کسی چیز یا اسکرین پر دھیان لگاتے ہیں تو پلکیں جھپکنا مشکل ہو جاتا ہے۔ جس کی وجہ سے ہماری آنکھوں میں نمی برقرار نہیں رہتی۔ لہذا پلکیں جھپکیں یا پھر مصنوعی آنسو اور آئی ڈرپس کا استعمال کریں۔ جب آنکھوں میں تھکاوٹ محسوس ہونے لگے تو 20، 20 کے اصول کے مطابق اپنی آنکھوں کو آرام دیں۔ ہر بیس منٹ کے بعد بیس فٹ دور رکھی کسی چیز کو 20 سکینڈ تک دیکھیں۔ اس طرح آنکھوں کو آرام ملتا ہے۔ اپنی کمپیوٹر اسکریں کی روشنی کمرے کی روشنی کے مطابق رکھیں۔ تیز روشنی آنکھوں کیلئے نقصان کا باعث بنتی ہے۔ لینزز آپ کی آنکھوں کیلئے نقصان کا باعث بنتی ہے۔ لینزز آپ کی آنکھوں کو خشک کر دیتے ہیں۔ کانٹیکٹ لینسز استعمال کرنے سے گریز کریں اور ان کی جگہ چشمے کا استعمال کریں۔ اگر درج بالا طریقے اپنانے کے باوجود آپ کی آنکھوں میں سرخی، دھندلا پن، جھنجلاہٹ، خارش اور سوزش باقی ہے تو فوری طور پر کسی آنکھوں کے ڈاکٹر سے رابطہ کریں۔ نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔ نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں
More News View all
Comments
Post Your Comments
Disclaimer: All material on this website is provided for your information only and may not be construed as medical advice or instruction. No action or inaction should be taken based solely on the contents of this information; instead, readers should consult appropriate health professionals on any matter relating to their health and well-being. The data information and opinions expressed here are believed to be accurate, which is gathered from different sources but might have some errors. Hamariweb.com is not responsible for errors or omissions. Doctors and Hospital officials are not necessarily required to respond or go through this page.
MORE DOCTORS